Home / Islamic Stories / سخت پریشانی دور کرنے کا خاص عمل

سخت پریشانی دور کرنے کا خاص عمل

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ میرے پیارے بھائیو اور بہنوں امید کرتا ہوں کے آپ سب خیریرت سے ہوں گے آج میں جو خاص عمل لے کر آپ کی خدمت میں حاضر ہوا ہوں یہ عمل بنیادی طور پر ایک آیت پر مشتمل ہے اور یہ خاص عمل حضرت علی رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے منقو ل ہے حضرت علی رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے فرمایا کہ جب بھی آپ پر کوئی سخت پریشانی آ جائے جب بھی آپ کو کسی مسئلے کا سامنا کرنا پڑے کوئی بہت بڑی پریشانی ہو جو ختم نہ ہوتی ہو تو اس ایک آیت کو پڑھنا شروع کر دو انشاءاللہ تعالیٰ اللہ تبارک و تعالی کے فضل و کرم سے فرشتے جو ہیں وہ آسمان سے اترنا شروع ہوجائیں گے

آپ کی مدد کے لیے یعنی آپ کا جو بھی مسئلہ ہوگا آپ کی جو بھی پریشانی ہوگی وہ اللہ پاک کی غیبی مدد سے وہ ضرور حل ہو جائے گی تومیرے بزرگو، بھائیو اور بہنوں حضور پاک ﷺ کا ارشاد گرامی ہے کہ میں علم کا شہر ہوں اور علی جو ہے اس کا دروازہ ہے تو حضرت علی رضی اللہ تعالی عنہ نے بےشمار لوگوں کے مسائل تھے ان کے حل کے لیے بہت ہی پیارے پیارے اعمال بتائے تو آج کا جو عمل ہے یہ بھی حضرت علی رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے منقول ہے تو جو عمل ہے وہ ہم آپ کو بتا دیتے ہیں کہ جب بھی آپ پر کوئی بھی پریشانی آ جائے کسی مسئلے سے آپ دو چار ہو کوئی سخت ترین مصیبت ہو جو حل نہ ہو رہی ہو تو اس کی ایک آیت کو پڑھنا شروع کر دو آیت یہ ہے حسبنا اللہ و نعم الوکیل ترجمہ اللہ ہمارے لیے کافی ہے اور وہ بہترین کارساز ہے اس ایک آیت کو پڑھنا شروع کردیں یعنی کم سے کم آپ نے ایک دن میں اس ایک آیت کو ایک ہزار دفعہ پڑھنا ہے یعنی جب بھی آپ پر کوئی پریشانی آ جائے کسی مسئلے سے آپ دوچار ہوں تو اس ایک آیت کو حسبنا اللہ و نعم الوکیل اس آیت کو آپ نے کم از کم ایک ہزار دفعہ ہے جو ہے وہ آپ نے پڑھنا ہے ان شاء اللہ تعالی اس ایک آیت کو پڑھنے کی بدولت سے

بہت جلدی جو فرشتے ہیں وہ آپ کی مدد کے لئے آسمان سے اترنا شروع ہو جائیں گے آپ کی جو بھی پریشانی ہوگی جو بھی آپ کا مسئلہ ہوگا وہ اللہ پاک کی غیبی مدد سے ضرور حل ہو جائے گا ہر طرح کی مشکل و پریشانی میں صرف اللہ تعالیٰ پر ہی توکل کرنا چاہیے اور زبان پر یہ الفاظ لانے چاہیں حسبنا اللہ و نعم الوکیل ہمیں اللہ ہی کافی ہے اور وہ بہترین کار ساز ہے حضرت ابن عباس رضی اللہ عنہ کا بیان ہے کہ ،،حسبنا اللہ و نعم الوکیل ،، کا کلمہ حضرت ابراہیم علیہ السلام نے اس وقت کہ تھا جب انہیں آگ میں ڈالا گیا (تو اللہ تعالیٰ نے آگ کو ٹھنڈک اور سلامتی والی بنا دیا) اور (یہی کلمہ) حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے اس وقت کہا تھا جب لوگوں نے کہ کفار نے آپ کے مقابلے میں لشکر جرار تیار کیا ہے تو ان سے ڈرو مگر اس سے آپ کے ایمان میں اور بھی اضافہ ہو گیا اور آپ نے فرمایا کہ ہمیں اللہ کافی ہے اور وہ بہت اچھا کارساز ہے اس خاص عمل کو آپ لازمی کریں اور اس وظیفہ کو صدقہ جاریہ سمجھ کر دوسرے جو مسلمان بہن بھائی ہیں ان تک بھی لازمی شیئر کریں تاکہ وہ بھی اس اس خاص عمل کو کریں اس عمل کو کر کے وہ بھی فیض یاب ہو جائیں

About admin

Check Also

When is the End of Times Coming? – End of the World?

This is a great question and if one is to believe all that has been …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *