Home / Amazing and Interesting / موت کے بعد زندگی کا ثبوت مل گیا

موت کے بعد زندگی کا ثبوت مل گیا

بعد ہماری روح زندہ رہتی ہے یا جسم سمیت سب کچھ ختم ہو جاتا ہے اور کیا موت کے بعد حیات کا وجود ہے خواتین حضرات یہ وہ سوالات ہیں جو روز اول سے انسانی ذہن اور اس کی جستجو کو اپنی طرف متوجہ کیے ہوئے ہیں جہاں ہم مسلمانوں کا ہمیشہ سے یہ عقیدہ رہا ہے کہ مرنے کے بعد ہی انسان کی حقیقی اور ابدی زندگی کا آغاز ہوتا ہے وہیں وہ لوگ جنہوں نے اپنی ذاتی زندگیوں سے خدا کو نکال باہر کیا ہوا ہے اور سائنس جستجو اور تحقیق کے میدان کے کھلاڑی ہیں

اور سائنس ہی کو مذہب کا درجہ دیتے ہیں وہ ہمیشہ سے اس بات کے انکاری رہے ہیں کہ مرنے کے بعد بھی کوئی زندگی کا وجود ہے وہ ہمیشہ سے اس خیال کی تقلید کرتے رہے ہیں کہ انسان کے جسم کے ختم ہونے کے ساتھ ہی اس کی داستان بھی ختم ہو جاتی ہے اور دوسروں کو بھی اسی نظریے پر قائل کرنے کی کوشش کرتے رہتے تھے کہ سائنس میں اس بات کا کوئی ثبوت موجود نہیں ہے کہ مرنے کے بعد انسانی حیات کا تسلسل رہتا ہے لیکن اب برسوں بعد امریکی سائنسدانوں کی ایک تحقیق میں اس اس میں عقیدے کا ایسا ثبوت سامنے آگیا ہے کہ سن کر آپ کا ایمان اور بھی مضبوط ہو جائے گا آواز آتی ہے تو ایک اٹل حقیقت ہے کہ جو زیرو بھی اس دنیا میں آتا ہے اس کو پھر آخر کار اس دنیا سے رخصت بھی ہو نہ ہوتا ہے اللہ تعالی قرآن مجید فرقان حمید میں ارشاد فرماتے ہیں کہ ہر ذی روح کو موت کا ذائقہ چکنا ہے موت کے بعد روح زندہ رہتی ہے یا سب کچھ ختم ہوجاتا ہے یہ بحث اتنی ہی پرانی ہے جتنی کے انسانی تاریخ سائنس دان مدتوں سے اس سوال کا جواب تلاش کررہے تھے اور بالآخر اب ماہرین نفسیات اور اسٹورز نے یہ دعوی کیا ہے کہ ان کے تجربات سے یہ ثابت ہوگیا ہے کہ موت کے بعد بھی زندگی جاری و ساری رہتی ہے اگرچہ اس کی نوعیت ہماری دنیا کی زندگی سے مختلف ہوتی ہے دوستو یہ گراؤنڈ بریکنگ ریسرچ یونیورسٹی آف واشنگٹن کے ماہرین نے کی ہے اور ان ماہرین کی تحقیق میں ثابت ہوا ہے کہ جب انسان سانس لینا بند کرتا ہے اور موت کے منہ میں چلا جاتا ہے تو سینکڑوں جین جسم کے اندر جاگ جاتے ہیں وہ آدمی کو دوبارہ زندہ کرتے ہیں اس تحقیق کے مطابق یہ جینز اور کھلی ہے آدمی کو موت کے بعد چار دن تک زندہ رہتے ہیں معروف اخبار کی رپورٹ کے مطابق جو لوگ ہفتے شدید زخمی ہو کر یہ دم گھٹنے سے مرتے ہیں وہ مرنے کے بعد زیادہ دن تک زندہ رہتے ہیں اس تحقیقاتی ٹیم کے رکن مائیکرو بائیولوجی کے پروفیسر پیٹر نوبل کا کہنا ہے کہ یہ تصور بہت دلچسپ ہے ہماری تحقیق میں ثابت ہوا ہے کہ جب ہمارے جسمانی نظام کام کرنا چھوڑ دیتا ہے اور ہم بظاہر مر جاتے ہیں تب بھی ہم زندہ رہتے ہیں یہ بہت حیران کن دریافت ہے عجیب و غریب تو ہے مگر بہت فائدے مند بھی ہے ویسے بھی ترنول کا کہنا یہ تھا کہ اس سے تفصیل کےلیے وڈیو دیکھیں۔

About admin

Check Also

نماز کی نیت کیسے کریں؟ قاری خلیل الرحمٰن جاوید نے ایسا جواب دیا کہ پورا مجمع ہنس پڑا

فرض، واجب، سنت اور نفل نمازوں کی نیت کیسے کی جائے؟ نیت دل کے ارادہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *