Home / Health / گھر میں ہر وقت یہ چیز رکھیں اللہ نہ کریں کسی بھی وقت کام آ سکتی ہے

گھر میں ہر وقت یہ چیز رکھیں اللہ نہ کریں کسی بھی وقت کام آ سکتی ہے

اسلام علیکم دوستوامید کرتی ہوں اللہ پاک کی رحمت سے آپ سب خیریت سے ہوں گے سینے میں محسوس ہونے والا جان لیوا درد برا تکلیف دے ہوتا ہے یہ درد عام طورپراس وقت ہوتا ہے جب دل کو خون مہیا کرنے والی شریانوں کی بندش ہو جائے دل کے دورے کی سب سے بڑی علامت درد ہے یہ درد اتنا شدید درد ہوتا ہے کہ مریض ترپنے پر مجبور ہوجاتا ہے۔ بعض اوقات دل کا دورہ انسان کی جان بھی لے لیتا ہے اللہ پاک سب کو دل کی بیماری سے بچائیں آمین جب کسی انسان کو دل کا دورہ پرتا ہے اگر مریض کو فوری طور پر طبی سہولیات مہیا نہ کی جائیں توانسان کی جان بھی جا سکتی ہے مزید جاننے کے لیے نیچے کلک کریں

آج کی میری ویڈیو اسی خطرناک مرض کے متعلق ہے۔ دل کا دورہ پرنے کی صورت میں کچن سے یہ چیز اٹھائیں اور مریض کو پلا دیں انشاء اللہ تعالی ہسپتال جانے کی ضرورت ہی نہیں رہے گی۔ اور اللہ تعالی کے حکم سے مریض بھی ٹھیک ہو جائے گا آخر وہ چیز ہے کونسی جان لیں۔ دل کا اچانک دورہ انسان کے لیے جان لیوا ثابت ہو سکتا ہے اور اگر ہسپتال جانے میں دیر ہو جائے تو انسان کی جان بھی جا سکتی ہے لیکن میں آج آپکو ایسا امیزنگ ٹوٹکا بتارہی ہوں جس کو استعمال کر کے آپ ایسی خطرناک صورت حال پر قابو پا سکتے ہیں۔ اگر کسی انسان کو دل کا دورا پڑ جائے تو ایک گلاس پانی لے کر اس میں سرخ مرچ پائوڈر ایک چائے کا چمچ ڈال کر مکس کر کے مریض کو پلا دیں پانی سادہ ہو نہ گرم نہ ٹھنڈا اور اگر مریض ہوش میں نہ ہو تو سرخ مچ کو چند قطرے پانی میں ڈال کر مریض کی زبان کے نیچے رکھیں سرخ مرچ خالص ہونی چاہئے انشاءاللہ تھوڑی ہی دیر میں مریض کی حالت سمبھل جائے گی سرخ مرچ میں یہ خصوسیت موجود ہے کہ یہ دل کے دورے کو جان لیوا کنڈیشن تک جانے نہیں دیتی اس لیے کسی بھی ایمرجنسی کی صورت میں سورخ مرچ کا استعمال لازمی کریں۔ دوستو اگر آپ کو یہ عمل اچھا لگا ہو تو اپنے دوستو کے ساتھ اور فیملی کے ساتھ بھی چئیر ظرور کریں شاید آپ کی وجہ سے کسی کی جان بچ جائے جزاک اللہ

About admin

Check Also

Lose weight and Detoxify Your Body and Kidney remedies

London: Fact is, you don’t have to kill yourself with a “detox” routine so as …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *