Home / Islamic / محرم الحرام میں سورت یاسین پڑھنے کی فیضیلت

محرم الحرام میں سورت یاسین پڑھنے کی فیضیلت

محرم الحرام اسلامی سال کا پہلا مہینہ ہے اس ماہ یہ وطیفہ کرلیں انشاءاللہ آپ کی ہرحاجت پوری ہوگی اورہردعا قبول ہوگی میرے دوستو وظیفہ یہ ہے کہ جیسے ہی آپ کی چاند پرنظر پرے اگر نہ نظر پر سکے موسم کی وجہ سے موسم خراب ہے دیکھائی نہیں دیا چاند تو کسی بھی علان سے آپ کو معلوم ہو گیا ہے کہ محرم کا چاند نظر آگیا ہے تو آپ اچھی طرح سے وضوکرلیں قرآن مجید کھولیں سورہ یاسین کو پڑھیں دل میں اللہ کا خوف رکھیں تین بار سورہ یاسین کو پڑھیں آپ ٹھر ٹھر کر آرام کے ساتھ پڑھیں پھر اللہ سے اپنی حاجت طلب کریں آپ کی جو بھی دعا ہے آپ اللہ سے مانگیں انشاءاللہ اللہ تعالی آپ کی دعا ظرور قبول فرمائے گا ماہ محرم جو کہ سال کے آغاز کا دن ہے پہلے دن آپ نے رو رو کر اللہ سے اپنے پچھلے سالوں کی زندگی کے گناہوں کی معافی طلب کرنی ہے

اورآئندہ زندگی میں گناہ سے توبہ کرنی ہے اور اس کے ساتھ نماز کے عادی بن جائیں نماز کبھی بھی نہ چھوڑیں سفر میں ہو جس حالت میں بھی ہوں جہاں پر بھی ہوں آپ نماز کو نہ چھوڑیں ہر سورت میں نماز پڑھیں۔ ماہ محرم عظیم الشان اور مبارک مہینہ ہے شھراللہ یعنی اللہ کا مہینہ کہہ کر اس کے شرف کو بیان کیا گیا ہے۔اس ماہ کے دوران نیک اعمال زیادہ سے زیادہ کرنے چاہئیں خاص طور پر نفلی روزے زیادہ رکھنے چاہئیں کیونکہ رسول ا۰کرم صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد گرامی ہے :رمضان کے بعد سب سے افضل روزے ماہ محرم کے روزے ہیں جو کہ اللہ کا مہینہ ہے ور فرض نمازوں کے بعدسب سے افضل نماز رات کی نماز ہے۔ (مسلم) ۔خاص طو ر پر یوم عاشورہ دسویں محرم کا روزہ رکھنا چاہیے۔ حضرت ابن عباس رضی اللہ تعالیٰ عنہما کہتے ہیں کہ میں نے رسول ﷺ کو کبھی نہیں دیکھا کہ آپﷺ کسی دن کو دوسرے دنوں پر فوقیت دیتے ہوئے اسکے روزے کا قصد کرتے ہوں سوائے یوم عاشورہ کے اور سوائے ماہ رمضان کے(بخاری)یعنی آپ ﷺرمضان المبارک کے علاوہ باقی دنوں میں سے یوم عاشورہ کے روزہ کا جس قدر اہتمام فرماتے اتنا کسی اور دن کا نہیں فرماتے تھے۔ا ایک سال کے گناہ معاف:حضرت ابوقتادة رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم سے یوم عاشورہ کے روزے کا سوال کیا گیا تو آپﷺ نے فرمایا :پچھلے ایک سال کے گناہ مٹا دیتا ہے۔(مسلم)محرّم الحرام کی پہلی رات کے نوافل اور اعمال:محرم الحرام کا چاند نظر آئےتو دو رکعت نفل اس طرح ادا کریں کہ ہر رکعت میں سورۂ فاتحہ کے بعد گیارہ مرتبہ سورۂ اخلاص پڑھیں۔ سلام کے بعد یہ پڑھیے:۔ سُبُّوحٌ قُدُّوْسٌ رَّبُّنَا وَرَبُّ الْمَلٰٓئِکَۃِ وَالرُّوْحِتو اجرِ عظیم کا مستحق قرار پائے گا۔ایک اور نماز جو حضرت سید خواجہ معین الدین چشتی اجمیری رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کے اور اد میں لکھی ہے وہ بھی دو رکعت نفل ہیں۔ اس کی ہر رکعت میں سورۂ فاتحہ کے بعدایک بار سور ۂ یٰسین شریف پڑھیں۔ دوسری روایتوں میں چھ نفل کا ذکربھی موجود ہے۔ ان کی ہررکعت میں سورۂ فاتحہ کے بعد دس مرتبہ سورۂ اخلاص پڑھیں۔ اس نماز کے پڑھنے والے کو اللہ کریم بہشت میں دو ہزار محل عطافرمائے گا اور ہر محل میں ہزار دروازے یاقوت کے ہوں گے اور ہر دروازہ پر ایک تخت زبرجد سبز کا ہوگا۔ اس تخت پرایک حور بیٹھی ہوگی اور اس کے علاوہ چھ ہزار بلائیں اس نمازی سے دور کی جاتی ہیں اور چھ ہزار نیکیاں اس کے نامۂ اعمال میں لکھی جاتی ہیں ۔ (راحۃ القلوب، جواہر غیبی) محرّم الحرام کے پہلے دن کے نفل اور دعا روزی و روزگار میں فرشتوں کے ذریعے مدد:یکم محرم الحرام کے دن دورکعت نماز نفل پڑھیں کہ ہر رکعت میں سورۂ فاتحہ کے بعد تین مرتبہ سورۂ اخلاص پڑھیے۔

سلام پھیرنے کے بعدہاتھ اٹھا کر یہ دعاپڑھے (دعا سے پہلے اور دعا کے بعد ایک ایک بار دورد شریف پڑھیے): و شخص اس نماز کو پڑھے گا اللہ تعالیٰ اس کے اوپر دو فرشتے مقرر کردے گا تاکہ وہ اس کے کاروبار میں اس کی مدد کریں اور شیطانِ لعین کہتا ہے کہ افسوس میں اس شخص سے تمام سال ناامید ہوا۔ (راحۃ القلوب ، جواہرِ غیبی)۔ عمر بھر ہربلا و برائی اور مصیبت سے حفاظت کا نسخہ:یکم محرم الحرام کے دن بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ130بار لکھ کر (یا لکھوا کر) جو کوئی اپنے پاس رکھے (یا پلاسٹک کوٹنگ کروا کر کپڑے، ریگزین یا چمڑے میں سلوا کر پہن لے) انشاء اللہ تعالیٰ عمر بھر اس کو یا اس کے گھر میں کسی کو کوئی برائی نہ پہنچے۔ (شمس المعارف مترجم، ص:83) عاشورہ کے دن کئے جانے والے دس اعمال ایسے ہیں جو اللہ تعالیٰ کے قرب کاباعث ہیں۔1۔ روزہ رکھنا 2۔ نفلی عبادت کرنا 3۔ یتیم کے سرپر ہاتھ رکھنا 4۔ توبہ و استغفار کرنا (قبرستان جانا) 5۔غسل کرنا 6۔ سرمہ لگانا 7۔ بیمار کی بیمار پرسی کرنا 8۔پیاسے کو پانی پلانا 9۔ صدقہ و خیرات کرنا 10۔ دسترخواں کشادہ کرنا۔(غینۃ الطالبین ) یوم عاشورہ کی نفلی عبادات:جس طرح عاشورہ کا دن ہمارے لئے معتبر اور محترم ہے اسی لحاظ سے اس دن کا ہم پر یہ حق ہے کہ اس کو نہایت ادب و احترام سے حالت روزہ اور زیادہ سے زیادہ قیام و سجود میں گزاریں۔حضرت خواجہ معین الدین چشتی رحمۃ اللہ علیہ محرم الحرام کے معمولات کا تذکرہ کرتے ہوئے فرماتے ہیں کہ جو کوئی محرم الحرام کی پہلی شب کو چھ رکعت نماز اس طرح پڑھے کہ ہر رکعت میں ایک مرتبہ سورۃ فاتحہ اور دس مرتبہ سورۃ اخلاص پڑھے تو بے پناہ اجر و ثواب عطا ہوگا۔ (فضائل ایام الشہود) عاشورہ کے دن چار رکعت اس طرح کہ ہر رکعت میں سورۃ فاتحہ ایک مرتبہ، سورۃ اخلاص 50 مرتبہ پڑھیں تو اللہ تعالیٰ اس کے ماضی و مستقبل کے 50 سالہ گناہ معاف فرمائے گا اور جنت میں اس کے لئے ایک ہزار نورانی محل بنا دے گا جو کوئی عاشورہ کے روز چار رکعت نماز اس طرح پڑھے کہ ہر رکعت میں سورۃ فاتحہ کے بعد 11 مرتبہ سورۃ اخلاص پڑھے اور سلام کے بعد کثرت سے درج ذیل دُعا پڑھے تو اللہ تعالیٰ اس کے 50 برس پہلے اور پچاس برس بعد کے گناہ معاف فرما دیتا ہے اور اس کیلئے ایک ہزار نورانی منبر بناتا ہے۔ (فضائل ایام الشہود)عاشورہ کی رات دو رکعت نفل قبر کی روشنی کے لئے پڑھے جاتے ہیں۔ ہر رکعت میں سورۃ فاتحہ کے بعد3، 3مرتبہ سورۃ اخلاص پڑھیں تو اللہ تعالیٰ قیامت تک اس کی قبر کو روشن رکھے گا۔

About admin

Check Also

سورۃ الاعراف سے دنیا اور آخرت کے لاجواب فائدے

643 قرآن پاک کی ویسے تو ہر ہر صورۃ اپنے اندر کمالات کے خزانے چھپائے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *